یہ پاگل پن یہ بیزاری

موضوع: شاعری

کسی نے میرے مخولی (مزاحیہ) روپ کو دیکھ کر پوچھا کہ تم ہر وقت مخولی کیوں رہتے ہو ، میں نے کہا کہ اگر میں سیریس ہوا تو یا میں سر کے بال نوچتا ہوا بھاگ جاوں گا ، یا میرے ارد گرد کے لوگ ۔

یہ نظم بھی انہی لوگوں کے نام ہے جو مجھ میں سنجیدگی تلاشتے ہیں ۔

 

یہ پاگل پن یہ بیزاری

اس پاگل پن کی بستی میں

راتیں اپنی برباد کرو

ان یادوں کو تم یاد کرو

خاموشی کا شور کہیں

وہ تنہائی کی آوازیں

اس صحرا میں اک رات کرو

اس دنیا سے بیراری میں

ان جھگڑوں کو آباد کرو

انہیں یاد کرو برباد کرو

وہ یادیں جن پر لڑتے ہو

وہ تنہائی کی یادیں ہیں

وہ باتیں جن پر مرتے ہو

وہ پاگل پن کی باتیں ہیں

اس دنیا کے جو رشتے ہیں

سب خود غرضی میں پستے ہیں

کچھ بھولے بسرے تنکے ہیں

پانی میں تیرنے والے سب

گندی نالی کے کیڑے ہیں

میں دنیا سے کچھ دور ہوا

ان رشتوں کو بھی بھول چکا

ان رشتوں میں جو ہوتے ہیں

وہ جھگڑےمجھ کو یاد نہیں

یہ بربادی کی دنیا ہے

اس دنیا میں گر جینا ہے

تم خالق کو ناراض کرو

خالق کو کر کے یاد کہیں

تم دنیا کو برباد کرو

ہاں میں ہوں پاگل آوارہ

تم سب کو چھوڑ کر بھاگا ہوں

تم اس دنیا میں مشہور مجھے

یوں ہی آدم سے بیزار کرو

پاگل ہوں اکیلا رہتا ہوں

اور اپنے خول میں جیتا ہوں

اس دنیا کی رنگینی کو

تم یاد کرو برباد کرو

میں آدم سے بیزار سہی

اس دنیا سے ناراض سہی

میں آنی جانی چیزوں سے

یوں پابندِ گفتار نہیں

یہ قانون اصول تمہارے ہیں

میں انکا تو محتاج نہیں

میں پاگل پنچھی اڑتا ہوں

ان ٹھنڈی تیز ہواوں میں

جہاں تیرے باپ کا راج نہیں

عظیم شاعر و ادیب انکل ٹام

تبصرے بذیعہ فیس بک۔۔۔۔

یہ پاگل پن یہ بیزاری پر اب تک 7 تبصرے

  • عمران اقبال

    Saturday، 3 December 2011 بوقت 7:31 pm

    کیا کہوں بھائی۔۔۔ ایسا لگا کہ یہ نظم میرے لیے ہی لکھی گئی ہے۔۔۔ کوئی تبصرہ نہیں دے سکتا اسے پڑھ کر۔۔۔ ماسوائے یہ کہ اچھی لکھی ہے۔۔۔

  • درویش خُراسانی

    Saturday، 3 December 2011 بوقت 4:57 am

    اوے تُو تو سچ مچ کا شاعر بن رہا ہے۔
    جیو ٹام

    یار یہ سیکورٹی کوڈ کو تو ختم کرو ۔تین تین بار کمنٹ لکھنا ہوتا ہے۔

    http://darveshkhurasani.wordpress.com/2011/11/13/786/

  • انکل ٹام

    Saturday، 3 December 2011 بوقت 5:22 am

    درویش بھائی اس سکیورٹی کوڈ کی وجہ یہ ہے کہ اس سے سپیمر رکے رہتے ہیں ، ورنہ بہت سے الٹے سیدھے تبصرے آتے ہیں ۔ لیکن میں کسی سے اس بارے میں بات کرتا ہوں جو جانتا ہو ۔ اور اسکا حل نکالنے کی کوشش کرتا ہوں ۔

    اور تبصرا زیادہ دفعہ کرنے سے بچنے کے لیے آپ ورڈ میں پہلے لکھا کریں اور یہاں پیسٹ کر دیا کریں ۔

  • عمیر ملک

    Saturday، 3 December 2011 بوقت 7:22 am

    بہت خوب۔ آخری پانچ لائینیں تو کمال ہی ہیں۔ لگتا ہے آپ باقاعدہ شاعر ہیں۔
    🙂

  • ڈاکٹر جواد احمد خان

    Saturday، 3 December 2011 بوقت 10:07 pm

    ماشاءاللہ ۔۔۔۔ آپ تو بہت عمدہ شاعری کرلیتے ہیں۔ بڑا ردھم اور نغمگی ہے آپکی شاعری میں۔۔۔۔ مگر یہ آخری لائن کچھ پٹری سے اتر گئی ہے۔ ایسا لگتا ہے جیسے جمیل جالبی کی گفتگو کے اختتامی کلمات اجمل پہاڑی سے کہلوائے گئے ہوں۔ 🙂

  • عمرفاروق

    Saturday، 3 December 2011 بوقت 10:51 am

    کافی اچھی شاعری ہے

  • عمرفاروق

    Saturday، 3 December 2011 بوقت 8:33 am

    آپ کافی خوبصورت شاعری کرتے ہیں
    ماشاءاللہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *