پہلا روزہ اور بے ربطگیاں

شروع رمضان میں ہی کوثر بیگ صاحبہ نے یہ سلسلہ شروع کر دیا تھا کہ آپ اپنے پہلے روزے کے بارے بتلائیں، شاید وکیل گھمن صیب کی پوسٹ کے بعد یہ سلسلہ شروع ہوا، میری سستی ہے کہ پوسٹ نہیں پڑھی، ویسے تو اس موضوع پر کسی بھی بلاگر کی کوئی پوسٹ نہیں پڑھی، پتا...

مکمل تحریر پڑھیں

انسانیت کی کمی

سلیم بھائی نے فیس بک پر ایک نئے سٹیٹس کے تحت یہ بات لکھی کہ وہ چائنا میں سفر کر رہے تھے جہاں انکے ہمراہ ایک عورت اپنی ایک معذور بچی کے ساتھ سفر کر رہی تھی اور سفر میں موجود پاکستانی مردوں اور دیگر ممالک کے لوگوں کے کسی نے نہ انکی کوئی فکر...

مکمل تحریر پڑھیں

نیک نے نیک اور بد نے بد جانا مجھے

کالج میں میرا ایک استاد تھا، ہر دفعہ کلاس میں میرے ساتھ “سٹیروٹیپیکل” لطیفے مارتا تھا، کبھی میری داڑھی پر کبھی مسلمانی پر وغیرہ وغیرہ، میں اسکو ہنس کر ٹال دیتا تھا، ویسے اسکو لطیفے مارنے کی بڑی عادت تھی ہر ایک کے ساتھ مارتا تھا، اور کھل کر گندے لطیفے بھی مارتا تھا ایک...

مکمل تحریر پڑھیں

حادثے کا خوف

آج شام میں ہی ملائشئن ائیر لائن سے رابطہ منقطع ہونے کی خبریں نظر سے گریں۔ جن جن دوستوں نے خبر پڑھی ہے انکو بتاتا چلوں کہ ہر جہاز میں ایک آلہ نصب ہوتا ہے جسکا نام ہے ای ایل ٹی یعنی ایمر جنسی لوکیٹنگ ٹرانسمیٹر، یہ آلہ امپیکٹ کے ساتھ ہی خود کو ایکٹیویٹ...

مکمل تحریر پڑھیں

کئی دفعہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟

میرے کمپیوٹر میں کچھ پوسٹس لکھی پڑی ہیں، جو میرے بلاگ پر ابھی تک شائع نہیں ہوئیں، میں انکو کبھی کبھی کھول کر دیکھتا ہوں، میں انمیں وہ جگہیں تلاشنے کی کوشش کرتا ہوں جہاں تبدیلیاں کر کے انکو شائع ہونے کے قابل بنایا جائے، اکثر میں وہ جگہیں تلاش کرنے سے قاصر رہتا ہوں،...

مکمل تحریر پڑھیں

سلام مائی

ثانیہ نے اس دن میرے ساتھ بڑے زور دار طریقے سے لڑائی کی تھی ، بس میں نے امی سے بات کرنے کے بعد فون بند کیا تو اسنے اپنی پلیٹ سے چمچ رکھ کر میری طرف غصے والی نظروں سے دیکھا اور یوں گویا ہوئی ، ” تم مجحے جیلسی کا احساس دینا چاہتے...

مکمل تحریر پڑھیں

ویلنٹائنز ڈے اور ہمیشہ کے تنہا

مجھے پتا تھا آج کا دن منہوس ہی ہونا تھا ، بس سٹاپ پر پہنچ کر جب مجھے اپنے ’’پارشلی‘‘ اندھے ہونے کا احساس ہوا تو میں نے آنکھوں پر ہاتھ مار کر عینک کی غیر موجودگی کا ثبوت حاصل کرتے ہوئے سوچا۔ چلو خیر ہے ، کالج کے لاکر میں ایک سیفٹی گلاسسز کے...

مکمل تحریر پڑھیں

تارے

دکان سے باہر نکلتے ہی میری نگاہ آسمان کی طرف گئی ، کافی تارے موجود تھے ، پتا نہیں یہ ٹورانٹو میں کیوں نظر نہیں آتے ، میں نے سوچا ، خالی چاند بغیر تاروں کے کتنا عجیب سا لگتا ہے ، گنجا گنجا سا لگتا ہے ۔ لاہور میں پلیوشن ٹورانٹو سے کہیں زیادہ...

مکمل تحریر پڑھیں

دل نی لگتا

میں سوچ رہا ہوں پاکستان چلا جاوں اب میرا دل نہیں لگتا یہاں ، میں نے چیس کے ڈبے میں چیس کریدتے ہوئے کہا۔ وہ جو پیزے پر چیس ڈال رہا تھا اچانک اپنے ہاتھ روک کر میری طرف دیکھا پھر زور سے قہقہہ لگایا اور گویا ہوا ، یعنی تو نے دل اب اپاکستان...

مکمل تحریر پڑھیں

مس اس نے تو تیاری بھی نہیں کی تھی

  پرائمری سکول میں سالانہ فنکشن ہونا تھا بچوں کو انعام شنام ملنے تھے، استاد صیب نے کہہ دیا کہ تم تقریر کرو گے۔ میں نے بھی امی کو کہہ دیا کہ ایک اچھی سی تقریر لکھ کر دیں میں نے فنکشن میں کرنی ہے ، امی نے بھی زور دار قسم کی تقریر لکھ...

مکمل تحریر پڑھیں