قصہ حلال پونڈی ماحول کا

قصہ حلال پونڈی ماحول کا ہر وقت مسلمانوں کے زوال کا ذمہ دار داڑھی والے مولوی کو ٹھرانے والے داڑھی منڈے غیر مولوی لبرل حضرات نے آج ہماری مسجد کے پارکنگ لاٹ میں ہر سال کی طرح اس سال بھی ایک میلہ لگایا تھا- جناب میلہ کیا تھا پونڈی بازی کے لئے “الانت والاخیر” ہی...

مکمل تحریر پڑھیں

رویہ عدم برداشت اور دہشت گردی کا حل

یہ تو مجھے پر زمانہ ہائی سکول سے ہی واضح ہو چکا تھا کہ میں کسی خلائی مخلوق سے کم نہیں ہوں، اور میری طرح کے یہاں اور پائے بھی نہیں جاتے، کہتے ہیں الجنس مائل الی الجنس کہ ایک مخلوق اپنی ہی جیسی مخلوق کی طرف مائل ہوتی ہے تو میں بھی اسی تلاش...

مکمل تحریر پڑھیں

کچھ تصاویرِ نوٹس کچھ کتابوں میں خطوط

  کافی دن سے بہت کچھ لکھنے کا سوچتا ہوں ، لیکن پھر چھوڑ دیتا ہوں ، میرا خیال تھا کہ امتحانوں کے بعد موج مستی ہو گی ،  لیکن مستی تو کیا ادھر موج بھی نہیں رہی کہ بس بوجھ بوجھ ہی ہو گئی اپنی تو ۔ ہیں جی ، انسان کے بڑے بڑے...

مکمل تحریر پڑھیں

گلہریوں کا تعاقب

کافی عرصے سے مجھے فوٹو گرافی کا شوق ہے ، بلکہ میں نے اپنی ایک پچھلی بلاگی میں ایک کمیرہ خریدنے کا اظہار بھی کیا تھا ۔ کچھ عرصہ پہلے ایک ایڈ دیکھی تھی ، ایک خاتون نائیکان ڈی تھری تھاوزنڈ بیچ رہی تھیں، میں نے تھوڑی سی سرچ انٹرنیٹ پر کی اور عمران اقبال...

مکمل تحریر پڑھیں

کیا پاکستانی معاشرہ مردوں کا معاشرہ کہلانے کا حقدار ہے ؟؟؟

میری والدہ ساٹھ کی دہائی میں پیدا ہوئی تھیں، وہ اپنے بچپن کا واقعہ سناتی ہیں کہ انکے گھر کے سامنے ایک خاندان رہتا تھا ، بیوی اپنے شوہر کو پانی والے پائپ سے مارا کرتی تھی اور بچے روتے تھے کہ ابو کو بچاو ، ابو کو بچاو۔ ایک دن وہ عورت اپنے آدمی...

مکمل تحریر پڑھیں

سردار طوطو سنگھ

ویسے اسکے کئی نام ہیں ۔ ابو اسکو چیکو کہتے ہیں ۔ میرا بڑا بھای اسکو لونی ٹونز کہتا ہے ۔ میں اسکو کبھی توتڑ سنگھ اور کبھی بے چین روح کہتا ہوں ۔ اسکو بے چین روح کہنے کی سب سے بڑی وجہ اسکی وہ حرکتیں ہیں جنسے پتا چلتا ہے کہ یہ کچھ...

مکمل تحریر پڑھیں

محبت اب بھی باقی ہے !!!!۔

مکمل تحریر پڑھیں